سچے پیار کی تلاش میں نوجوان لڑکی نے تاریخ کی شرمناک ترین چیز بناڈالی

سچے پیار کی تلاش تو بہت سوں، بالخصوص خواتین میں سے بیش تر کو ہوتی ہے، لیکن ایک یورپی لڑکی نے اس تلاش میں ایسی شرمناک ترین چیز بنا ڈالی ہے کہ تاریخ میں جس کی مثال نہیں ملتی۔

نگار آن لائن کی رپورٹ کے مطابق اس لڑکی کا نام الیسن ہے جس نے مردوں کو اپنی طرف راغب کرنے کے لیے پوشیدہ اعضاءسے خارج ہونے والے مادے پر مشتمل پرفیوم بنا ڈالا ہے اور اس کا دعویٰ ہے کہ اس یہ پرفیوم لگانے سے مرد واقعی اس کی طرف راغب ہوتے ہیں۔ قرون وسطیٰ میں یورپی باندیاں پوشیدہ اعضاءسے خارج ہونے والا مادہ اپنے کانوں کے پیچھے، گردن پر اور جسم کے دیگر حصوں پر لگاتی تھیں۔ ان کے خیال میں اس بے شرمی سے ان کا آشنا ان کی محبت میں گرفتار ہو جاتا تھا۔ الیسن نے اسی طریقے کو قدرے جدید انداز میں اختیار کیا ہے۔

اس کا کہناتھا کہ براہ راست اس مادے کا استعمال مجھے مناسب نہیں لگا چنانچہ میں نے اس سے پرفیوم بنالیا۔ میں نے مردوں کے ساتھ ملاقاتیں کرکے اس پرفیوم کا تجربہ بھی کیا ہے۔ اس سے پہلے جو مرد میری طرف راغب نہیں ہوتے تھے، اس پرفیوم کی وجہ سے وہ بھی مجھ سے محبت کرنے لگے ہیں۔“

اپنا تبصرہ بھیجیں