تین عادات سے زندگی بدل دینے والی خاتون

تین عادات سے زندگی بدل دینے والی خاتون
ایک خاتون کا وزن جب 110 کلو گرام تک پہنچ گیا تو اس کی شخصیت اتنی تبدیل ہوگئی کہ وہ خود تصاویر میں اپنے آپ کو پہچاننے میں ناکام ہونے لگی۔
مگر پھر فلاڈلفیا سے تعلق رکھنے والی 27 سالہ ربیکا گرافٹن نے خود کو بدلنے کا فیصلہ کیا اور اس مقصد کے لیے تین عادات کو اپنالیا۔

وہ خود بتاتی ہیں کہ جب ان کا وزن 110 کلوگرام تک پہنچا تو انہوں نے فیصلہ کرلیا کہ بس بہت ہوگیا، اب خود کو بدلنا ہوگا اور اس مقصد کے لیے تین عام عادتوں نے ان کی مدد کی۔

صرف دو سال کے دوران انہوں نے 45 کلوگرام وزن کم کرکے اپنے آپ کو مکمل طور پر بدل لیا۔

انہوں نے بتایا کہ وزن کم کرنے کے لیے انہوں نے اپنی کیلوریز کی ٹریکنگ ایک ایپ کے ذریعے شروع کی، جس کے دوران وہ ہفتے میں پانچ دن بہت کم کھاتیں مگر دو روز دل بھر کر، تاکہ ڈائیٹنگ کے منفی اثرات مرتب نہ ہوسکیں۔
اسی طرح انہوں نے روزانہ ایک گھنٹہ ورزش شروع کردی جیسے وزن اٹھانا اور دوڑنا۔

وقت گزرنے کے ساتھ ان کا وزن کم ہونے لگا اور دو سال میں وہ خود کو بدلنے میں کامیاب ہوگئیں۔
جسمانی وزن میں کمی کے نتیجے میں ان کا چہرہ اتنا تبدیل ہوگیا کہ ان کی والدہ بھی لوگوں کے ہجوم میں انہیں پہچان نہیں سکیں۔

اپنے جسمانی وزن کو برقرار رکھنے اور دیگر کے اندر حوصلہ بڑھانے کے لیے وہ جسمانی وزن میں کمی، صحت مند طرز زندگی اور دیگر پہلوﺅں کے لیے انسٹاگرام پر لوگوں کو مشورے دیتی ہیں جن کے فالورز کی تعداد ڈیڑھ لاکھ کے قریب پہنچ چکی ہیں۔
ربیکا کہتی ہیں ‘ مجھے خواتین کی جانب سے مسلسل پیغامات ملتے ہیں کہ کس طرح میری وجہ سے ان کے اندر زندگی میں پہلی بار جم جانے کا حوصلہ ہوا’۔

اپنا تبصرہ بھیجیں